سرگودھا سمیت پنجاب بھر میں کی کچی آبادیوں کے لاکھوں مکینوں کو مالکانہ حقوق دیئے

سرگودھا (سٹاف رپورٹر) سرگودھا سمیت پنجاب بھر میں کی کچی آبادیوں کے لاکھوں مکینوں کو مالکانہ حقوق دیئے بغیر ایف بی آر کی طرف سے منتقلی جائیداد کے دوران ٹیکس عائد، بلدیاتی اداروں کو احکامات جاری، کچی آبادیوں کے مکین سراپا، تفصیلات کے مطابق سرگودھا سمیت صوبہ بھر میں گذشتہ 40 سے 50 سالوں کے دوران مختلف سیاسی حکومتوں کی طرف سے کچی آبادیوں کے مکینوں کو نہ صرف سرکاری اراضی پر پلاٹوں کی الاٹمنٹ کرکے ووٹ حاصل کئے گئے بلکہ ان میں سے سینکڑوں کچی آبادیوں کو کئی سال گزر جانے کے باوجود تاحال مالکانہ حقوق تک نہ فراہم کئے جاسکے۔ ان کچی آبادیوں میں رہائش پذیر مکین اشٹام پیپر پر اپنے پلاٹوں اور مکانوں کی خریدوفروخت تاحال کرنے پر مجبور ہیں۔ بلدیاتی اداروں کے ذرائع کے مطابق پلاٹوں کی ٹرانسفر کے دوران بلدیاتی اداروں کی طرف سے ساڑھے 3 مرلہ سکیم کی ٹرانسفر پر 28 ہزار روپے وصول کی جاتی ہے جبکہ ایف بی آر کی طرف سے جاری ہونے والے احکامات کے مطابق ان کچی آبادیوں کے پلاٹوں اور مکانوں کی ٹرانسفر کے دوران مقرر کردہ ایف بی آر کا ٹیکس بھی وصول کیا جائے۔ جس پر کچی آبادیوں کے مکین نہ صرف سراپا احتجاج بن گئے بلکہ انہوں نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس ظالمانہ پالیسی کو نہ صرف ختم کیا جائے بلکہ مالکان حقوق سے محروم الاٹیوں کو مالکان حقوق دینے کا بھی حکم جاری کیا جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *